تکبر کی چادر

The Way I Think

انسان کی گردن میں غرور کا  سیریا  نہ صرف اسکی گردن کو اکڑا دیتا ہے، بلکہ اسکی نظر میں ہر چیز کو خود سے چھوٹا اور حقیر کر دیتا ہے۔ اس فانی انسان کے پاس صرف وقت کی ہی تو قید ہوتی ہے۔اور جب وقت اسکے غرور کی کرچیاں کرچیاں کرتا ہے۔

تو پستی میں ڈوبا یہ انسان ان کرچیوں میں اپنے کتنے ہی عکس دیکھتا ہے۔
ہر بار اسکی نظر اس بے بس تھکے ہوۓ عکس پہ رک جاتی ہے، جس نے اسے دھوکے میں ڈال رکھا ہوتا ہے۔۔
خود پسندی کا دھوکہ۔۔۔
آج وقت نے اسکے ہر عکس کو دھندلا, بے معنی کر دیا۔۔
آج وقت نے اسکو ہرا دیا۔۔۔

آج وقت نے اسکو تنہا ، بہت اکھیلا کر دیا۔۔۔
آج قبر کی مٹی نے اسکو اپنے اندر خوب ملا جلا لیا۔۔

آج یہ انسان سواۓ خاک کے اور کچھ بھی نہ رہا۔۔۔
ہاۓ اے بدبخت انسان، توں…

View original post 27 more words

Advertisements

One thought on “تکبر کی چادر

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s