انسان یا پھر نسیان

The Way I Think

insan yah pir nisyaanانسان لفظ بنا ہے” نسیان” سے ، جس کا مطلب ہے “بھول جانا “… اس نسیان لفظ کا انسان پر خاص اثر و رسوخ ہے… تبھی انسان کو کسی کام کے کرنے  کی بار بار یاد دہانی کروانی پڑتی ہے۔

       اسلام ایک فطرتی دین ہے .پھر بھلاں   کیسے ہو سکتا ہے کہ اسلام انسان کی اس بھول جانے والی فطرت کو کیسے مد نظر نہ رکھتا . ..تبھی قرآن میں ہر دوسرے مقام پر جنت اور   دوزخ کا ذکر ملتا ہے … عام زندگی میں دن میں پانچ وقت اذان دے کر نماز کی یاد کروائی جاتی ہے۔۔

– – – – – – – – – – – – – – –

   کبھی سوچا ہے کہ یہ اذان کا اپنے وقت مقررہ پر  ہونا ہم پر ہمارے   الله کا کتنا بڑا  احسا ن ہے … ہم انسان اپنی زندگی کے تانے بانے میں اتنا الجھ کر رہ…

View original post 350 more words

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s